Behaviors & Attitudes, Social, Uncategorized, حسن معاشرت

Whatsapp Bombardment

واٹس ایپ بمباری

۔  دیکھئے! یہ جو واٹس ایپ ہے ناں… یہ پیغام رسانی کا ایک بہت اچھا اور نافع ذریعہ ہے… لیکن اس کا استعمال ایسے کرنا چاہیے کہ موصول کنندہ آپ کے بے وقت پیغامات سے عاجز نہ آ جائے…

 

۔  دیکھئے! “صبح بخیر” کا ایک میسج ایک صبح کے لیے پوری کفایت کر دیتا ہے… سو صبح بخیر کے میسیجز کی دس بیس گولیاں چلانے کی چنداں ضرورت نہیں… وہ بھی صبح صادق کے وقت۔۔۔

 

۔  دیکھئے! جمعہ کی مبارکباد دینا شریعت سے ثابت نہیں… تاہم اگر آپ پھر بھی مبارکباد دینے پر مصر ہیں تو فی جمعہ ایک میسج کافی ہے… کیا ضرورت ہے جمعہ کے دن مبارکبادوں کا پورا برسٹ مارنے کی۔۔۔

 

۔  دیکھئے! اگر کسی وجہ سے آپ کو رات بھر نیند نہیں آتی… یا اللہ کے فضل و کرم سے آپ منہ اندھیرے تہجد کے لیے جاگ جاتے ہیں… تو اس کا یہ مطلب نہیں کہ باقی دنیا بھی آپ کے ساتھ ساتھ جاگ جاتی ہے یا دنیا کو آپ کے ساتھ ساتھ جاگ جانا چاہئے… نہ ہی یہ مطلوب ہے کہ واٹس ایپ کو کلاشنکوف کی طرح استعمال کر کے سارے عالم کو تہجد کے لیے جگایا جائے… جن کو تہجد یا فجر کی نماز کی فکر ہوتی ہے وہ اپنے جاگنے کا خود اہتمام کر لیتے ہیں… موبائل فون میں الارم بھی ہوتا ہے ناں؟

۔  دیکھئے! احادیث کی کتابوں میں یہ روایت ملتی ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم جب تہجد کیلئے بیدار ہوتے تو بستر سے آہستہ اٹھتے اور نہایت آہستہ سے دروازہ کھولتے تھے ایسا اس لئے کرتے کہ اماں عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا کی نیند میں خلل نہ آئے،

(مسلم:۲/۳۱۳)

 

دیکھئے! اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم اپنی زوجہ مطہرہ کے آرام کا کس درجہ خیال رکھ رہے ہیں جو کہ اسی حجرہ مبارک بلکہ اسی بستر مبارک میں محو استراحت ہیں… اور آپ… اپنے سے میلوں دور بیٹھے احباب پر واٹس ایپ کی بمباری کر رہے ہوتے ہیں… آپ کو کچھ خبر بھی ہے کون کس وقت سویا رات کو۔۔۔

 

دیکھئے! یہ جو موبائل فون ہے ناں… یہ آپس کے رابطوں کا بہترین ذریعہ ہے… اور اکثر لوگ اپنا موبائل فون چوبیس گھنٹے آن رکھتے ہیں… اب آپ کی میسج بمباری کے باعث نیند خراب ہونے کے خوف سے کوئی اپنا فون رات سوتے وقت آف یا سائلنٹ کر لیتا ہے… اور صبح کو اسے پتہ چلتا ہے کہ رات انتہائی ایمرجنسی میں کسی نے اسے کال کی… لیکن موبائل آف یا سائلنٹ ہونے کے سبب وہ کال ریسیو نہیں کر سکا… بروقت مدد کو نہیں پہنچ سکا… تو اس کا ذمہ دار کون ہو گا۔۔۔ 
آپ… صرف آپ۔۔۔

 

کچھ تو خیال کیجیے محترم۔۔۔