Emaan, Eman, Hajj Umrah, Islam, Love your Creator... اللہ سے محبت کیجئے, یوم عرفہ, Yom e Arafa, اسلام, حج

Arif, Arafat, Ma’rfat

عارف، عرفات، معرفت

ایک بزرگ کی مجلس تھی۔

گفتگو کا موضوع تھا معرفت الہٰی۔۔۔

اللہ کی ذات کا عرفان کیسے حاصل ہو؟

بندہ کیسے عارف بن سکتا ہے؟

اس کے لئے کیا کیا جتن کرنے ہوں گے؟

کن کن مراحل سے گزرنا ہو گا؟

کیا کیا قربانیاں دینی ہوں گی؟

وغیرہ وغیرہ

حضرت ایک ایک نکتہ بیان کر رہے تھے۔

مجمع پر ایک سکوت طاری تھا۔۔۔

شرکائے مجلس ہمہ تن گوش بنے حضرت کی گفتگو سن رہے تھے۔۔۔

وہیں سے ایک موچی کا بھی گزر ہوا۔۔۔

بیٹھ کے سننے لگا حضرت کی باتیں۔۔۔

بیان ختم ہوا تو سارا مجمع تو سبحان اللہ ما شآء اللہ کی گردان کرتا ہوا اپنی اپنی راہ چلا۔

حضرت جی نے موچی کو بلا کے شفقت سے پوچھا:

“میاں کچھ سمجھ بھی آیا کیا گفتگو ہو رہی تھی؟”

بولا: “جی معرفت پر وعظ ہو رہا تھا.”

پوچھا: “پھر کیا سمجھ آیا؟ کیا ہوتی ہے معرفت؟”

بولا: “جی اور تو کچھ پلے نہیں پڑا۔۔۔ بس اتنا ہی سمجھ آیا کہ ۔۔۔

پہلے جو میرا اللہ کہے، میں کر دوں،

پھر جو میں کہوں، میرا اللہ کر دے!”

 حج پر یہی سب کچھ ہوا کرتا ہے جناب۔

ARIF, ARAFAT, MA’ARFAT

========================

Aik Buzurg ki Majlis thi

Guftugu ka Mouzu tha Ma’arfat e Ilahi

Allah ki Zaat ka Irfan Kesey Hasil Ho?

Banda Kesey Arif ban sakta hy?

 Is kay liye kya kya jatan karnay hon gay?

Kin kin marahil say guzarna ho ga?

Kya kya qurbanian deni hon gi?

Waghera waghera

Hazrat aik aik Nukta bayan ker rahay they.

Majmay per aik sukut tari tha.

Shuraka e Majlis hama tan gosh banay Hazrat ki guftugu sun rahay thay

Wahin say aik Mochi ka guzar hua

Beth k laga sunnay Hazrat ki baten

Bayan khatam hua to sara majma SubhanAllah Ma Shaa Allah ki gardaan karta hua apni rah chala

Hazrat Ji nay Mochi ko bula kay shafqat say poocha: “Miyan! Kuch samajh bhi aya kya guftugu ho rahi thi?”

Bola: “Ji Ma’arfat pay wa’z ho raha tha.”

Poocha: “Phir! Kya samajh aya? Kya hoti hy Ma’arfat?

Bola: “Ji aur to kuch pallay nahi para. Bus Itna he samajh aya kay… Pehley jo Mera Allah Kahay, Main Kar Doon… Phir Jo Main Kahoon, Mera Allah Kar Day!”

HAJJ PER YEHI SUB KUCH HUA KARTA HY JANAB!

Advertisements
Emaan, Eman, Hajj Umrah, Islam, یوم عرفہ, Yom e Arafa, اسلام, حج, علم دین

Youm e Arafa

یوم عرفہ

یوم عرفہ

الیوم اکملت لکم دینکم ۔۔۔

دین کی تکمیل کا دن۔۔۔

و اتممت علیکم نعمتی ۔۔۔

بندوں پر نعمت کے اتمام کا دن۔۔۔

و رضیت لکم الاسلام دینا۔۔۔

اسلام کو بندوں کے لئے دین کی حیثیت سے پسند کئے جانے کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

خطبہ حجۃ الوداع کا دن

یوم عرفہ

خواب کی تعبیر کا دن۔۔۔

آرزو کی تکمیل کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

پراگندہ حالوں کا دن ۔۔۔

بکھرے بالوں کا دن ۔۔۔

سفید پوشوں کا دن ۔۔۔

عرق آلود نفوس کا دن ۔۔۔

غبار آلود ملبوس کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

حج کا دن ۔۔۔

وقوف عرفات کا دن ۔۔۔

  خانہ بدوشوں کی ماننداک میدان میں ڈیرہ جمانے کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

لبیک اللھم لبیک کی پکار کا دن۔۔۔

دعاؤں کی تکرار کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

تکبیر کا دن ۔۔۔

تہلیل کا دن ۔۔۔

تحمید کا دن ۔۔۔

تسبیح کا دن۔۔۔

درود و سلام کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

اعتراف جرم کا دن ۔۔۔

گناہوں پر ندامت کا دن ۔۔۔

سچی توبہ کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

بدن سے نکلتے پسینے کی دھاروں کا دن۔۔۔

آنکھوں سے بہتی آبشاروں کا دن ۔۔۔

یوم عرفہ

بلکنے کا دن ۔۔۔

گڑگڑانے کا دن ۔۔۔

یوم عرفہ

دلوں کے اضطراب کا دن۔۔۔

سسکیوں اور مناجات کا دن۔۔۔

کپکپاتے لبوں پر مچلتی التجاؤں کا دن۔۔۔

دل کی گہرائیوں سے نکلی آہوں کا دن ۔۔۔

رحمت الٰہی کی متلاشی نگاہوں کا دن۔۔۔

بخشش کے حصول کے لئے پھیلائے گئے ہاتھوں کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

شیطان کی ذلت و رسوائی کا دن ۔۔۔

شیطان کی محنت کی بربادی کا دن ۔۔۔

شیطان کا اپنے سر میں خاک ڈالنے کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

باری تعالیٰ کے آسمان دنیا پر نزول فرمانے کا دن ۔۔۔

فرشتوں کے سامنے بندوں پر فخر فرمانے کا دن ۔۔۔

فرشتوں کو گواہ بنا کر بندوں کو معاف کرنے کا دن ۔۔۔

یوم عرفہ

بندوں پر انعام و اکرام کا دن۔۔۔

مغفرت کا دن ۔۔۔

بخشش کا دن ۔۔۔

جہنم سے نجات کا دن ۔۔۔

باغیوں کے لئے عام معافی کے اعلان کا دن ۔۔۔

یوم عرفہ

گناہوں سے پاک صاف ہو جانے کا دن۔۔۔

از سر نو پیدائش کا دن۔۔۔

ایک نئے جنم کے آغاز کا دن ۔۔۔

آئندہ کے لئے گناہوں سے بچنے کے عزم کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

حج مبرور کی صورت میں

جنت کنفرم ہو جانے کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

رب کو منانے کا دن ۔۔۔

رب کے مان جانے کا دن۔۔۔

یوم عرفہ

پیچھے رہ جانے والوں کے لئے۔۔۔

حسرت و یاس کا دن۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔